اداکاری کے علاوہ فلم کے تکنیکی شعبوں میں بھی قسمت آزماؤں گی، عظمیٰ حسن

 بھارت میں تھیٹرپر کام کرچکی ہوں،بالی ووڈ فلم میں ایسا کام نہیں کروں گی جس سے میرے وطن کی بدنامی ہوں ، 
فوٹو : فائل

 بھارت میں تھیٹرپر کام کرچکی ہوں،بالی ووڈ فلم میں ایسا کام نہیں کروں گی جس سے میرے وطن کی بدنامی ہوں ،
فوٹو : فائل

 لاہور:  معروف اداکارہ وماڈل عظمیٰ حسن نے کہا ہے کہ اپنے کیرئیر کی پہلی فلم ’’ارتھ ٹو‘‘میں شان جیسے ورسٹائل اداکار، ہدایتکار اور شاندارانسان کے ساتھ کام کرنا اعزازکی بات ہے۔

عظمیٰ حسن نے کہا شان سے اداکاری ہی نہیں بلکہ ہدایت کاری کی تربیت بھی حاصل کی۔ فلم میں شبانہ اعظمی کے کردار کو نبھانا بہت مشکل ٹاسک ہے۔ اب دیکھتے ہیں کہ فلم کی نمائش پرکیسا رسپانس سامنے آتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے ’’ایکسپریس‘‘ کوخصوصی انٹرویودیتے ہوئے کیا۔ عظمیٰ حسن نے کہا کہ میرا تعلق ٹی وی اورتھیٹر سے ہے۔ میں نے ٹی وی اورتھیٹر پر بہت کام کیا اورکبھی سوچا بھی نہ تھا کہ کبھی فلم میں کام کرونگی، یہی نہیں یہ بھی کبھی خیال نہیں آیا تھا کہ ایک دن مجھے سپراسٹارشان کے ساتھ کام کرنے کاموقع ملے گا ۔ یہ میری خوش قسمتی ہے کہ میں ’’ارتھ ٹو‘‘ میں ایک اہم کردارادا کرنے کے لیے مجھ سے رابطہ کیا گیا۔ فلم کی شوٹنگ کے دوران بہت سی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، کیونکہ فلم اورٹی وی، تھیٹرمیں خاصا فرق ہے۔

شان نے بڑی رہنمائی کی اوراسی لیے میں اچھا کام کرپائی۔ انھوں نے کہا کہ میں اپنے کیرئیرمیں سب کچھ کرنا چاہتی ہوں۔ ٹی وی، تھیٹراورفلم کے شعبوں میں کام کرتی رہوں گی اوراس کے علاوہ تکنیکی شعبوں میں بھی قسمت آزماؤں گی۔

اس کی بڑی وجہ شان ہی ہیں جن کے کام کرنے کے اندازنے مجھے بہت متاثرکیا ہے۔ ان کودیکھ کرمجھے یوں محسوس ہوتا ہے کہ اس شعبے سے وابستہ ایک فنکارکوتمام تکنیکی کام بھی آنے چاہئیں، تاکہ وہ بہترانداز سے اپنا کام مکمل کرسکے۔ ایک سوال کے جواب میں عظمیٰ حسن نے بتایا کہ میں انڈیا میں تھیٹرمیں پرفارم کرچکی ہوں۔ جہاں تک بات بالی ووڈ فلموں میں کام کرنے کی ہے تو ضرورکام کروں گی ، لیکن ایسا کوئی کام نہیں کروں گی جس سے میرے وطن کی بدنامی ہو۔ کیونکہ مجھے پاکستانی ہونے پرفخر ہے اورمیرے لیے سب سے پہلا اپنا وطن ہے۔