بھارت میں شوبز سے وابستہ افراد کی اکثریت خود غرض ہے، عروہ حسین

 لاہور:  اداکارہ وماڈل عروہ حسین نے کہا ہے کہ بھارت میں شوبز کا کاروبار کرنے والوں کی اکثریت انتہائی خود غرض ہے۔ 

عروہ حسین نے ’’ ایکسپریس‘‘ سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ بالی ووڈ دنیا کی دوسری بڑی فلم انڈسٹری ہے اوروہاں ہرروزکی ایوریج کے حساب سے تین سے پانچ فلمیں نمائش کے لیے پیش ہوتی ہیں۔  وہاں پرفنکاروں ، گلوکاروں اورشاعروں کی بھی کوئی کمی نہیں ہے لیکن اس کے باوجود اگرپاکستانیوں کی صلاحیتوں سے استفادہ کیا جاتا ہے توضروراس میں کوئی بات ہو گی وگرنہ بھارت میں شوبز کا کاروبار کرنے والوں کی اکثریت انتہائی خود غرض ہے اور ویسے بھی یہ ایک کاروبار ہے اوراس میں تب تک سرمایہ کاری نہیں کی جاسکتی جب تک اس سے منافع حاصل نہ ہوسکے۔

اداکارہ نے کہا کہ چند ایک فنکاروں کے علاوہ پاکستانی فنکاروں کوزیادہ بڑے بجٹ کی فلموں اورمعروف فنکاروں کے ساتھ کام کرنے کا موقع نہیں مل سکا لیکن اس کے باوجود پاکستانی فنکاروں نے اپنے منفرد کام سے ثابت کیا کہ وہ ہرحال میں اچھا کام کرسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ بہت سے فنکاروں کے ساتھ ایسا بھی کیا گیا کہ ان کام فلمبندکرنے کے بعد جان بوجھ کرکاٹ دیا گیا اس کی ایک بڑی وجہ تویہ بھی تھی کہ اگروہ کام بڑی اسکرین پردکھادیاجاتا توپبلک بھارت کے ’’سپراسٹارز‘‘ کوشدید تنقید کا نشانہ بنا دیتی مگر ان سب سازشوں کے باوجود پاکستانی فنکاروں کی بھارت یاترا بڑی کامیاب رہی ہے اوریہ سلسلہ اب رک نہیں سکتا بلکہ اس یاترا کے لیے بھارت سے بہت سے نوجوان فنکاروںکودعوت نامے ملتے رہے ہیں۔

 

The post بھارت میں شوبز سے وابستہ افراد کی اکثریت خود غرض ہے، عروہ حسین appeared first on ایکسپریس اردو.